جو کوئے یار سے نکلے تو سوئے دار چلے

اسرائیلی وزیراعظم
بنیامین نیتن یاہو حکومت سازی کیلئے ایوان صدر کے اجلاس میں شرکت کے بعد,
بے ایمانی و بدعنوانی کی پیشی بھگتنے کیلے کمرہ عدالت کے اندر آ رہے ہیں،
اسرائیلی سپریم کورٹ نے اصالتا پیشی سے وزیراعظم کا استثنی معطل کر دیا_
اب کرپشن کے مقدمے کی سماعت ہفتے میں تین دن ہوا کرے گی

اگر جرمُ ثابت ہو گیا تو,
موصوف 14 سال جیل کی ہوا کھائیں گے_
مزے کی بات یہ ہے کہ نہ ہی جمہوریت کو خطرہ ہے اور نہ ہی وزیراعظم صاحب بنیامین نیتن یاہو کے پلیٹلٹس کم ہو ئے ہیں_

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں