وزیر اعظم کا قوم سے خطاب

🤑🤑 وزیر اعظم کا قوم سے خطاب
ایک منافق کی چرب زبانی کے سوا کچھ نہ تھا🤮🤮
(عمران نیازی کی مکاریوں کا مکمل اور مدلل جواب)

پہلی چالاکی 🤥🤥
عمران نیازی نے کہا
“سفیر نکالنے سے فرانس کو کوئی فرق نہیں پڑے گا”

کھلم کھلا جھوٹ😈👿

کیونکہ پھر اسی خطاب میں خود ہی کہا کہ اگر سفیر نکالا تو تمام یورپی ممالک ہم سے بائیکاٹ کر دیں گے

عجیب بات ھے عمران نیازی
اگر تم کہتے ہو کہ فرق نہیں پڑے گا تو پھر تمام یورپی ممالک بائیکاٹ کیوں کریں گے؟؟
تو سنو نیازی سفیر نکالنے سے بہت زبردست فرق پڑے گا کیونکہ ان کے سفیر کو نکالے جانے میں انکی شدید توہین اور بے عزتی ہے

دوسری مکاری 😥😥
پھر کہا کہ پولیس زخمی ہوئی

مگر چالاکی کی انتہا دیکھیں کہ 18 اپریل کو لاہور میں جو معصوم عاشقان رسول کے خون کی ندیاں بہائیں ان پر تیزاب پھینکوایا آنسو گیس کے شیل برسائے کئی ماؤوں کے نوجوان کنوارے بیٹے قتل کیے کئی معصوم بچوں کے والد کو مار کر انہیں یتیم کیا
مگر اس چالاک نے اپنی اس فرعونیت کی معافی مانگنا تو دور ان مظالم کا نام تک نہیں لیا

تیسرا دھوکا 👹👹
پھر کہا کہ انڈیا ان فسادات پر خوش ہے

اگر ایک منٹ کے لیے آپکی یہ بے تکی اور بے دلیل بات مان بھی لی جائے تو اسکا جواب یہ ہے کہ
آپ انڈیا کو خوش نا ہونے دیں
آج اپنے آقا فرانس کے سفیر کو نکال دیں حالات معمول کے مطابق ہو جائیں گے اور انڈیا غمگین ہو جائے گا

چوتھی منافقت

تم نے کہا کہ
“اگر فرانس کے سفیر کو نکال دیا تو مالی نقصان ہو گا مہنگائی بڑھ جائے گی”

پاکستانیو
دیکھو تو مہنگائی کی بات کر کون رہا ہے؟
بے شرم انسان تو بھی مہنگائی اور معیشت کی بات کر سکتا ہے؟؟
کچھ شرم ہے تجھ میں؟؟؟
تیری اس بونگی کا کیا جواب دوں
مہنگائی کا جو طوفان تیرے دور میں ہے وہ تو ستر سالہ تاریخ میں شاید کبھی ہو

اور اے بد بخت انسان یہ جملہ بولنے سے پہلے تو مر کیوں نہیں گیا
بات حضور کی عزت کی ہو رہی ہے اور تجھے دنیاوی مال کی پڑی ہے
اور نادان انسان تو ایک دفعہ فرانس کا سفیر نکال کے دیکھتا تو سہی
خدا کی قسم حضور کے صدقے غيب سے وہ وہ برکتیں ملتی جو تیرے وہم وہ گمان میں بھی نہیں تھیں
صحابہ کے پاس کیا دنیاوی دولت اور طاقت تھی
نہیں
بلکہ عشق رسول کی طاقت تھی جس کی وجہ سے انہوں نے اس وقت کی فرانس سے بھی زیادہ طاقتور طاقتوں سے ٹکر لی اور کامیاب ہوئے
اور کچھ نہیں تو ان کو ہی سوچ لے
ان کے نقش قدم پر چلنے کی کوشش ہی کر لے

پانچویں غداری

وزیر اعظم کی غداری انتہا دیکھیں کہ وہ بار بار یہ کہتا رہا کہ میں نے اقوام متحدہ میں یہ کہا فلاں فورم پہ یہ بولا وغیرہ وغیرہ
تو وزیر اعظم صاحب آپ کی وہ ساری باتیں اور تقریریں اسی طرح ہیں جس طرح آپ کا ریاست مدینہ کا سیاسی اور کھوکھلا اور مذہب کارڈ کا نعرہ

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں