پولیس ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم

اہور پولیس کی ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم،روپ اور ہوٹل آئی سوفٹ ویئرزکی مدد سے جرائم پیشہ افراد کے خلاف کارروائیاں
رواں سال کے دوران08ہزار844نجی ملازمین،76ہزارسے زائدکرایہ داروں کا اندراج کیا گیا
ہوٹل آئی سوفٹ وئیر کے ذریعے 02لاکھ 94ہزار افراد کاڈیٹا سسٹم میں لایا گیا۔
ٹیننٹ رجسٹریشن کے دوران11جبکہ ہوٹل آئی کی مدد سے81ریکارڈ یافتہ ملزمان گرفتار۔
ڈی آئی جی آپریشنزساجد کیانی

ڈی آئی جی آپریشنز لاہورساجد کیانی نے کہا ہے کہ ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم،روپ اور ہوٹل آئی سوفٹ ویئرز کی مدد سے جرائم پیشہ افراد کے خلاف گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے۔ جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے اشتہاری مجرمان کی گرفتاریوں میں خاطر خواہ بہتری آئی۔ساجد کیانی نے کہاکہ ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم پولیس سٹیشن ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم سے مربوط ہے۔ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم کی مدد سے پولیس کے پاس شہر کی عارضی رہائش گاہوں کا جامع ریکارڈمرتب ہو رہا ہے۔ جس سے جرائم پیشہ افراد کا اپنی شناخت چھپانا مشکل ہوتا جا رہا ہے۔
تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنز ساجد کیانی نے بتایا کہ ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم کی مدد سے رواں سال کے دوران 08ہزار844نجی ملازمین،76ہزارسے زائد کرایہ داروں کا اندراج کیا گیا۔ ٹیننٹ رجسٹریشن کی مدد سے کرایہ داروں کے اندراج کے دوران11اشتہاری مجرمان کو حراست میں لیا گیا۔ کینٹ ڈویژن پولیس نے2487،سٹی2643، سول لائن ڈویژن نے225،اقبال ٹاؤن179،ماڈل ٹاؤن749جبکہ صدر ڈویژن پولیس نے2561نجی ملازمین کا اندراج کیا۔اسی طرح کرایہ داروں کا اندراج کرتے ہوئے کینٹ ڈویژن نے14390،سٹی7630، سول لائن4050،اقبال ٹاؤن6036،ماڈل ٹاؤن22189جبکہ صدر ڈویژن پولیس نے21754افراد کا اندراج کیا۔ڈی آئی جی آپریشنز نے مزید کہا کہ ہوٹل آئی سوفٹ ویئر کے بھی مثبت نتائج موصول ہو رہے ہیں۔ہوٹل آئی سوفٹ وئیر کے ذریعے02لاکھ94ہزار829افراد کا ریکارڈ چیک کیا گیاجبکہ دوران چیکنگ81ریکارڈیافتہ ملزمان حراست میں لئے گئے۔ساجد کیانی نے کہا کہ پولیس افسران ٹیننٹ رجسٹریشن سسٹم کے تحت کرایہ داروں اور نجی ملازمین کی رجسٹریشن مزید بہتر بنائیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں