الحمراء میں بلوچ کلچر ڈے

لحمراء میں بلوچ کلچر ڈے 2021
وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بُزدار کی ہدایت پرلاہور آرٹس کونسل الحمراء میں بلوچ ڈے کے موقع پر رنگا رنگ ثقافتی تقریب کا انعقاد
صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو کی کلچرل شو میں خصوصی شرکت، فنکاروں کی پرفارمنس کوسراہا۔
ہماری حکومت،پنجاب سمیت ملک بھر میں ثقافتی سرگرمیوں کے فروغ پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔صوبائی وزیرثقافت خیال احمد کاسترو
کلچرل شو کا مقصد صوبائی ہم آہنگی کو فروغ دینا،علاقائی آرٹسٹوں کی حوصلہ افزائی کرنا اور احسن عوامی رویوں کو تقویت بخشنا ہے۔خیال احمد کاسترو
بلوچ ڈے پر کلچرل شو کے انعقاد سے اہل لاہور کوبلوچی تہذیب و تمدن سے روشناس ہونے کا موقع ملا۔ایگزیکٹوڈائریکٹر الحمراء
بلوچی ثقافت کا رنگارنگ اور متنوع ثقافتی حسن جہاں میل جول،ہم آہنگی اور تعاون کے جذبے سے سرشار ہے وہاں اتحاد، یگانگت اور جاذبیت بھی اپنی مثال آپ ہے۔ڈاکٹر اسلم ڈوگر
علاقوئی ثقافتوں کے فروغ سے ہم آہنگی اور بھائی چارہ کی فضاء کو فروغ ملتا ہے۔ڈائریکٹر آرٹس اینڈ کلچر ذوالفقار علی زلفی
الحمراء ثقافتی سرگرمیوں کا محور بناچکا ہے جہاں عوام کو معیاری تفریح فراہم کی جاتی ہے۔ذوالفقار علی زلفی
کلچرل شو میں سرائیکی وسیب، بلوچی طرز زندگی، زام دھریس،لوک گیت و بولیاں،جھومر ڈانس اور زرمیہ نغمے پیش کئے گئے
بلوچ ڈے کے موقع پر کلچرل شو میں شرکت کے لئے لوگ ٹولیاں کی شکل میں لاہور کے ثقافتی دامن الحمرا میں آتے رہے۔
02۔
کلچرل شو میں الحمرا اکیڈمی آف پرفارمنگ آرٹس کے طلبہ و طالبات نے بھی پرفارم کیا۔
بلوچ ثقافت نہ صرف منفرد تاریخی روایات کی امین ہے بلکہ عصر حاضر میں بھی اپنی ایک ممتاز حیثیت رکھتی ہے۔اس انفرادیت کے پیش نظر بلوچ ڈے کے مو قع پر بلوچی روایات کی دلکش روایات اورثقافتی ورثے کے تحفظ اور فروغ کیلئے محکمہ اطلاعات و ثقافت پنجاب کے فعال اور متحرک ثقافتی اداروں لاہور آرٹس کونسل الحمراء اور پنجاب آرٹس کونسل نے بلوچ کلچر ڈے کے موقع پر ایک بلوچی ثقافت پر مبنی پروقار تقریب کا انعقاد کیا۔بلوچی کلچرکا رنگارنگ اور متنوع ثقافتی حسن جہاں میل جول،ہم آہنگی اور تعاون کے جذبے سے سرشار ہے وہاں اتحاد، یگانگت اور جاذبیت بھی اپنی مثال آپ ہے۔ہمارے لئے بلوچی ثقافت اور تہذیب قابل فخر سرمایہ ہے۔جس کو زندہ دلانِ لاہور کے سامنے پیش کرنے کیلئے محکمہ اطلاعات و ثقافت نے ٹھوس اقدامات اٹھائے اور لاہور کے ادبی وثقافتی دامن الحمراء میں بلوچی ثقافتی دن کے موقع پر کلچرل شوکا کا میاب انعقاد ممکن بنایا اور پاکستان کی زرخیز دھرتی میں سموئے بلوچی کلچر کو یہاں کی عوام کے سامنے کیا۔کلچرل شومیں علاقائی ثقافت کے بیش بہا رنگ دیکھائے گے۔فنکاروں نے بلوچی تہذیب کے عکاس سفید شلوار قمیض کر رکھی تھی،ڈھول کے تھاپ پر جھوم رقص تمام حاضرین کوجھومنے پر مجبور کررہا تھا،تلوار ڈانس اپنی نوعیت میں اعلیٰ مہارتوں کا اظہار تھا۔ بلوچی کلاسیکل گائیکی کا اپنا ایک جداگانہ انداز اور تاثر تھا جسے دیکھنے اور سننے والوں نے بہت پسند کیا۔صوبائی وزیر ثقافت پنجاب خیال احمد کاسترو نے اس کلچرل شو میں شرکت کرکے تقریب کو چار چاند لگا دیئے،جن سے فنکاروں کے حوصلے بڑھے،ثقافتی تحریک کونئی فکر اور سوچ ملی، آگے بڑھنے کے جذبے جوان ہوئے۔ اس موقع پر ایگزیکٹو ڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل ڈاکٹر اسلم ڈوگر نے‘صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو،پاکستان کے معروف اداکار شان،سیکرٹری اطلاعات و ثقافت راجہ جہانگیر انور کی دستار بندی کی،جبکہ ڈائریکٹر آرٹس اینڈ کلچر ذوالفقار علی زلفی نے نے ایگزیکٹو ڈائریکٹر الحمراء ڈاکٹر اسلم ڈوگر کے سر پر دستار سجائی،صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو اپنے محصوض اندا زمیں
03َ۔
فنکاروں کو بھرپور اداد دیتے رہے،اسٹیج پر جا کر آرٹسٹوں سے ملے،ان کی حوصلہ افزائی کی اوربلوچی ثقا فتی طائفوں کی شاندار پرفارمنس کو سراہا۔خیال احمد کاسترو نے شانداربلوچی کلچرل شوکا انعقاد پر محکمہ اطلاعات و ثقافت کی تعریف کی اور کہا کہ لوک فنکاروں کی حوصلہ افزائی وقت کی اہم ضرورت ہے،حکومت پنجاب علاقائی فنکاروں کی حوصلہ افزائی کیلئے اس طرح کے مزید شو منعقد کرائے گئی۔صوبائی وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو،سیکرٹری اطلاعات وثقافت پنجاب راجہ جہانگیر انور،ایگزیکٹوڈائریکٹر لاہورآرٹس کونسل ڈاکٹر اسلم ڈوگربھی اس موقع پر ان کے ہمراہ تھے۔
ادب اورآرٹ دھرتی کی دین ہوتا ہے،انسان جب اپنا رشتہ دھرتی سے جوڑتا ہے،تب دھرتی اسے ادب اورآرٹ عطا کرتی ہے،بلوچی ثقافت کے باسیوں نے اپنے دھرتی سے اس خوبصورتی کے ساتھ اپنا تعلق جوڑ رکھا ہے تو اس کی دھرتی یہاں کے رہنے والوں کو ادب اور آرٹ عطا کر رہی ہے۔جسے لاہور کی عوام کے سامنے پیش کرنے کے لئے ٹھوس منصوبہ بندی کی گئی، اس کلچرل شو کو کامیاب بنانے کے پیش منظر میں وہ خیال پوشدہ ہے جو حقیقت ہونے کیلئے بے تاب تھا،اس پروگرام کو ڈیزائن کرنے کیلئے اعلی اذہان کی اعلیٰ فکری مہارتیں نے اپنا فعال کردارادا کیا جو بلاشبہ خراج تحسین کے لائق ہیں۔کلچر شو میں جوڑے ایک ایک عنصر کو رنگا رنگ بنانے کیلئے بھرپور محنت کی گئی۔اس ثقافتی شو کا انعقاد پاکستان کے رنگ،ثقافت کے سنگ،تھیم کے تحت کیا گیا۔اس پروگرام کی کامیابی اس ٹیم ورک کا پیش خیمہ ہے جو اس کے سربراہ کے علم دسوست اوراہل ذوق ہونے کا پتہ دیتی ہے اور وہ نام ہے سیکرٹری اطلاعات و ثقافت راجہ جہانگیر انور کا۔اس کلچرل شو میں دستیاب سامان ضیافت پیدا کرنا مسلسل جہد کا نتیجہ ہے۔
وزیر اعلی پنجاب سر دار عثمان بُزدار کی ہدایت پر الحمراء آرٹس کونسل میں صوبائی ہم آہنگی و قومی یکجہتی کے فروغ کے لئے بلوچ کلچر ڈے کے موقع پر بلوچی ثقافتی رنگوں پر مبنی شاندار تقریب کا انعقاد ہوا۔محکمہ اطلاعات وثقافت اور اس کے ماتحت اداروں لاہور آرٹس کونسل،پنجاب آرٹس کونسل کے مشترکہ کاوشوں سے شو کو چار چاند لگ گئے۔پروگرام میں صوبائی وزیر
04۔
ثقافت خیال احمد کاسترو نے خصوصی شرکت کی اور اس موقع پر کہا کہ ملک بھر کے تمام علاقائی ثقافتی رنگ ہماری مجموعی پہچان ہیں،بلوچ کلچر ڈے پر بلوچستان سے آئے اپنے بھائیوں کو خوش آمدید کہتے ہیں،پنجاب حکومت علاقائی آرٹسٹوں کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے،بلوچی کلچر ڈے منانے کا مقصد محبت کا پرچار،یہاں کی ثقافتی قدریں دلوں کو ملاتی اور معاشرتی زندگی کے حسن میں اضافہ کرتی ہیں۔ ایگزیکٹوڈائریکٹر الحمراء ڈاکٹرا سلم ڈوگر نے وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو،سیکرٹری راجہ جہانگیر انور،اداکار شان کی دستاربندی کی اور تلوار کا تحفہ دیا،ایگزیکٹوڈائریکٹر الحمراء ڈاکٹر اسلم ڈوگر نے اس موقع پر کہا کہ الحمراء پنجاب کے لوگوں کی بلوچستان سے اور بلوچستان کے لوگوں کی پنجاب سے محبت گہری کر رہا ہے،الحمراء ملک بھر کی ثقافتوں کی میزبانی کا اعزاز رکھتا ہے،بلوچی آرٹسٹوں نے دُنیا میں ہمیشہ ملک کا نام روشن کیا۔شو میں بلوچستان کے معروف گلوکار اختر چنال کا گایا ہوا گایا ریلیز کیا گیا،بلوچی تلوار رقص کا مظاہرہ،شو میں بلوچی وسیب،لوک گیت،جھومر، نرسُر پر پرفارم کیا۔ڈائریکٹر آرٹس اینڈ کلچر ذوالفقار علی زلفی نے شو کو آغاز سے اختتام تک نہایت شاندار انداز میں ڈیزائن کیا اور اس حوالے سے کہاکہ ملک بھر کی ثقافتیں سانجھی ہیں جو ہماری دلو ں کو جورٹی ہیں۔معرو ف گلوکاروں غوث علی شاہ، محمد علی مزاری نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا،چھاپ رقص بھی تقریب کا حصہ تھے،الحمراء اکیڈمی آف پرفارمنگ آرٹس کے آرٹسٹوں نے اپنی پرفارمنس میں بلوچی آرٹسٹوں کا خیر مقد کیا،الحمراء کا خیر سگالی کا پیغام کی بھرپور پذیرائی ہوئی۔شو میں ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی۔
محکمہ اطلاعات و ثقافت پنجاب کے زیرا ہتمام”پاکستان کے رنگ‘ثقافت کے سنگ“کے تحت بلوچی کلچرل شو کے انعقاد کیلئے جس جگہ کا انتخاب کیا گیا وہ اپنے اندر اپنائیت کا احساس لئے ہوئے ہیں،ادب دوست اور ادب پرور فضاء کی حامل ہے،لاہورآرٹس کونسل کئی دھائیوں سے ادب وثقافت کی آبیاری میں پیش پیش ہے،یہ ادارہ لاہور کے ادبی و ثقافتی دامن کی حیثیت رکھتا ہے، یہ پلیٹ فارم جہاں ملک بھر کی ثقافتی اقدار کی میزبانی کا اعزاز رکھتا ہے وہاں دنیا بھر کے بیسوں غیر ملکی ثقافتی وفود اس پر اپنے فن کا مظاہرہ کرچکے ہیں۔سو بلوچی کلچر شو کی میزبانی بھی الحمراء کا ایک
05۔
اعزاز تھی، جہاں فنکاروں کی حوصلہ افزائی کیلئے صوبائی وزیر ثقافت خود آئے۔ ان سے اس اقدام سے ظاہر ہے کہ وہ صوبہ بھر میں ثقافت کو فروغ دینے کے لئے بھرپور عزم ہیں۔جس کو عملی جامہ پہنانے کیلئے محکمہ اطلاعات وثقافت شب وروز مصروف عمل ہے۔اس کلچر ل شو میں پرفارم کرنے والے فنکاروں کی حوصلہ افزائی کی گئی جواپنی احسن اقدار کے فروغ کی بنیادی ضرورت ہے،فن اور فنکار کی ترقی و ترویج اس کی حوصلہ افزائی سے مشروط ہے جو اس کلچر شو کا خاصہ تھی،ایگزیکٹوڈائریکٹر الحمراء ڈاکٹر اسلم ڈوگرنے اس شو کی کامیابی کے لئے کئے جانے والے اقدامات کی خود نگرانی کی اور دستیاب وسائل کے اندر رہتے ہوئے اپنے کردار کو بخوبی احسن ادا کیا۔ایگزیکٹوڈائریکٹر پنجاب آرٹس کو نسل رضوان شریف کا فعال اور محترک کردار اس کامیاب فیسٹیول کا ضامن رہا۔
بلوچی کلچرل شو کے انعقاد سے جہاں صوبائی یک جہتی کو فروغ ملاوہاں یہ نئی نسل کیلئے اپنی تہذیب و ثقافت کے نئے اور منفرد رنگ دیکھنے کا بھی ذریعہ ثابت ہوا۔ نوجوانوں نے قبائلی رقص دیکھے،جھومراورتلوار ڈانس کا نظارہ کیا، علاقوئی موسیقی سنی۔اس طرح کے اقدامات سے احسن عوامی رویوں کو تقویت ملتی ہے،عوامی سطح پر رابطے بڑ ھتے ہیں، قربت پیدا ہوتی ہے،بلوچی وسیب،بولیاں اور کلا سیکل موسیقی زندہ دلانِ لاہور کیلئے دلچسپی کا موجب تھی۔حاضرین کیلئے زرمیہ نغمے بے حددلچسپی کا باعث ہے
جوجنگوں کے موقع پر فتح حاصل کرنے کی خوشی گائے جاتے ہیں اور اس میں زیادہ ترالغوز یا بانسری اور اس کی سنگت میں طنبو رہ یاستار اور سانگی سے مماثلت رکھنے والے بلوچی ساز بجائے گئے جنہیں سننے والوں نے بے حد پسند کیا۔بلوچی کلچرل شو کے موقع پر الحمراء کے لان میں ہاتھ سے بنے علاقوئی ملبوسات کے سٹالز بھی لگائے گے۔
محکمہ اطلاعات و ثقافت پنجاب،صوبہ کے دیگر علاقوں کی ثقافت کو فروغ دینے کے لئے ایک ٹھوس منصوبہ رکھتا ہے، جس کے مطابق جلد دیگر علاقائی کلچرل شو کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں