حکومت کی اولین ترجیح لوگوں کو ہر ممکن ریلیف کی فراہمی

ذرائع کے مطابق

لاہور 16 مارچ۔۔صوبائی وزیر اوقاف پنجاب صاحبزادہ سید سعید الحسن شاہ نے کہا ہے کہ وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی قیادت میں عوام کے منتخب نمائندگان اور سرکاری افسران ترقیاتی منصوبوں کی تیزی سے تکمیل اور عام آدمی کو درپیش مسائل کے حل کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھا رہے ہیں اور بزدار حکومت کی اولین ترجیح لوگوں کو ہر ممکن ریلیف کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے- انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب کا ویژن تعلیم‘ صحت‘ سماجی شعبوں کی بہتری اور روزمرہ مسائل کا پائیدار حل ہے جس کیلئے بالخصوص متعلقہ محکموں اور افسران کو ٹاسک دئیے گئے ہیں اور ان کی کارکردگی کا ماہانہ بنیادوں پر جائزہ لیا جارہا ہے- انہوں نے کہا کہ عام آدمی کی جان ومال‘ عزت و آبرو کا تحفظ‘ مہنگائی کا خاتمہ اور روزگار کے بہتر مواقع کی فراہمی کے ساتھ ترقیاتی منصوبوں کی شفاف اور بروقت تکمیل کے ذریعہ لوگوں کا معیار زندگی بلند کرنا اہم ترین حکومتی ایجنڈاہے اور ہم سب نے مل جل کر ٹیم کی صورت میں ان اہداف کو حاصل کرنا ہے-
وزیر اوقاف پنجاب صاحبزادہ سید سعید الحسن شاہ نے ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی ورکروں اور دیگر وفود سے ملا قات میں کیا-صوبائی وزیر نے کہا کہ بزدارحکومت پسماندہ اور گذشتہ ادوار میں نظر انداز کئے جانے والے علاقوں کی ترقی کیلئے خصوی اقدامات کررہی ہے اور بنیادی ضروریات زندگی تک رسائی کو یقینی بنانے کیلئے تمام ممکنہ وسائل فراہم کئے جارہے ہیں – انہوں نے کہا کہ تمام ادارے عوامی خدمت کے بنیادی فرض کی ادائیگی اور لوگوں کوریلیف کی فراہمی کیلئے متحرک کردئیے گئے ہیں اور فرائض میں غفلت اور عدم دلچسپی برتنے والوں کو فی الفور عہدوں سے ہٹا دیا جائے گا-ا نہوں نے کہا کہ عوام کے نمائندوں اور سیاسی اکابرین کی مشاورت سے تمام بنیادی ضروریات زندگی کی فراہمی اور دستیابی کویقینی بنایا جارہا ہے۔ ترقیاتی منصوبوں میں مکمل شفافیت کیلئے ٹینڈروں میں پول سسٹم کو ہر صورت ختم کیا جائے گا- انہوں نے کہا کہ لوگوں کے جان ومال کے تحفظ اور امن وامان کیلئے بھی سخت اقدامات کئے گئے ہیں – سروس ڈیلیوری میں یقینی طور پر بہتری کیلئے بھی ٹھوس اقدامات اور کڑی مانیٹرنگ شروع کردی گئی ہے اور کھلی کچہریوں‘ اوپن ڈور پالیسی کے تحت تمام افسران عام آدمی کی شکایات کے ازالہ کیلئے ہمہ وقت دستیاب ہیں – انہوں نے کہا کہ ڈویژن اور اضلاع کی سطح پر عوامی نمائندگان اور سرکاری افسران کے درمیان کوآرڈینیشن کو بھی بہتر بنایا جارہا ہے۔محکموں کی کارکردگی اور مسائل کے حل کیلئے کئے جانے والے اقدامات کے نتائج کے حوالے سے بھی اراکین اسمبلی اور سیاسی زعماء سے فیڈ بیک لی جارہی ہے- انہوں نے کہا کہ ہم سب نے مل کر عوام کی خدمت اور ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات کرنا ہیں اور اس سلسلہ میں عوامی نمائندگان کو محنتی‘ ایماندار اور کام کرنے والے افسران اور ملازمین کی بھرپور سپورٹ کرنا ہوگی- مسائل کے حل اور عام آدمی کو ریلیف کی فراہمی کے سلسلہ میں وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی سردار عثمان بزدار کے ویژن کے تحت نیک نیتی‘ خلوص اور ٹیم سپرٹ کے تحت کام کیا جائے گا- انہوں نے کہا کہ تمام محنتی افسران اور ملازمین کو ہر سطح پربھرپور سپورٹ ملے گی جبکہ ناقص کارکردگی والے ملازمین سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی- انہوں نے کہا کہ ترقیاتی سرگرمیوں میں تیزی لانے کے سلسلہ میں بھی دستیاب فنڈز اور وسائل عوامی خدمت کے جذبے سے بروئے کار لائے جائیں گے اور ہر سطح پر شفافیت کو فوقیت حاصل ہوگی-

محدثِ اعظم پاکستان کے سالانہ عرس کی اختتامی تقریب سے ڈائریکٹرجنرل اوقاف پنجاب خطاب
ابو ا لفضل مولانا محمد سردار احمد ؒ کی احیائے دین اور عشقِ رسولﷺ کے فروغ کے حوالے سے خدمات لائقِ تحسین ہیں
روادارانہ فلاحی معاشرے کی تشکیل کے لیے صوفیأ کے نظامِ فکر وعمل کو اپنانا ہوگا
برصغیر میں شرف آدمیت اور تکریم انسانیت کے عنوان کو اولیأ اور صوفیأ نے عزت اور تقویت بخشی
محراب و منبر کے اعزاز کو بحال اور برقرار رکھنے کے لیے قدیمِ فنون کی طرف بھی توجہ ضروری ہے
لاہور 16مارچ۔۔محدثِ اعظم پاکستان کے سالانہ عرس کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہررضا بخاری ڈائریکٹرجنرل اوقاف پنجاب نے کہا کہ روادارانہ فلاحی معاشرے کی تشکیل کے لیے صوفیأ کے نظامِ فکر وعمل کو اپنانا ہوگا۔ برصغیر میں شرف آدمیت اور تکریم انسانیت کے عنوان کو اولیأ اور صوفیأ نے عزت اور تقویت بخشی۔ ابو ا لفضل مولانا محمد سردار احمد ؒ کی احیائے دین اور عشقِ رسولﷺ کے فروغ کے حوالے سے خدمات لائقِ تحسین ہیں۔ وہ عمر بھر دینی روایات کے استحکام کے لیے سرگرم رہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوفیأ کی تعلیمات کے ابلاغ سے ہی روادارانہ فلاحی معاشرے کی تشکیل اور دہشت گردی کا خاتمہ ممکن ہوسکے گا۔اس موقع پر آستانہ حضرت محدثِ اعظم پاکستان کے سجادہ نشین صاحبزادہ محمد فیض رسول حیدر رضوی نے کہا کہ اس وقت اپنی صفوں میں اتحاد و اتفاق کی ضرورت ہے۔ محراب و منبر کے اعزاز کو بحال اور برقرار رکھنے کے لیے قدیمِ فنوں کی طرف بھی توجہ ضروری ہے۔ اس موقع پر اسلامک یونیورسٹی، جامعہ محدثِ اعظم پاکستان کے فارغ التحصیل طلبہ کی دستار بندی کی گئی۔ واضح رہے کہ سالانہ عرس مبارک کی تقریبات خصوصی دُعا کے ساتھ اختتام پذیر ہو ئی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں