نماز کے احکامات

حضرت ابو ھریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا :جب کوئی تم میں سے لوگوں کو نماز پڑھائے اسے چاہئیےکہ وہ مختصر نماز پڑھائے کیونکہ ان میں کمزور، بیمار اور ضرورت مند بھی ہوتے ہیں اور جب کوئی بذات خود نماز پڑھے تو جس قدرے چاہے لمبی کرے (بخاری ومسلم)

امام کےلیےضروری ھےکہ جماعت کراتےہوئےمقتدیوں کاخیال رکھے بہتر ہے کہ جناعت کی صورت میں نماز مختصر پڑھائی جائے کیونکہ جماعت میں کمزور بیمار اور ضرورت مند لوگ شامل ہوتے ہیں ہاں اگر کوئی اکیلا نماز پڑھے تو وہ جس قدر چاہے اپنی نماز کو طول دے سکتا ہے۔

احکام الحدیث:
1:امام کے لئے مقتدیوں کا خیال رکھنا ضروری ہے۔
2: نماز باجماعت زیادہ طویل نہیں ہونی چاہئیے۔
3:انفرادی نماز جتنی کوئی چاہے اسے لمبا کیا جا سکتا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں