لاہور میں لاکڈاؤن اور PMAکی من مانیاں

لاہور میں کرونا کے پیشِ نظر حکومت پنجاب نے

PMA کے انڈر چلنے والی ٹرانسپورٹ بند کرنےکا فیصلہ کیا تاکہ لاہور میں کرونا کے پھیلاؤ کو روکا جا سکے ٹرانسپورٹ بند ہو گی لیکن جو سٹاف۔ تھا میٹرو کا سپیڈو کا اور اورنج لائن میٹرو ٹرین کا ان کو بولا گیا کہ آپ کی حاضری ہو گی آپ نے انا ہے مطلب یہ کہ آپ انسان نہیں ہیں آپ کو کرونا نہیں ہوتا دو دن بعد میٹرو اور سپیڈو کے سٹاف کو کہا جاتا ہے کی آپ کو چھٹیاں ہیں آپ گھر جاسکتے ہیں
جناب والا
کیا اورنج لائن میٹرو ٹرین کا سٹاف انسان نہیں ہیں ؟کیا ان کو کرونا نہیں ہوتا ؟کیا وہ کرونا سے پہلے ڈیوٹی انجام نہیں دیتے رہے؟

اصل بات کی طرف آتا ہوں جناب اس وقت اس سٹاف کا سب سے بڑا مسلئہ ڈیوٹی پہ پہنچا ہے کوئی کہنہ سے آتا ہے تو کوئی مرید کے سے کوئی شیخوپورہ سے تو شرقپور شریف سے ٹرانسپورٹ بند ہونے کی وجہ سے روزانہ 4سو سے 5سوکرایا لگ جاتا ہے
دیر سے آنے کی وجہ سے zoسے الگ اورsupervisorسے الگ ہوتی ہے ہماری اور سارہ دن ہم فارغ ہوتے ہیں ہماری بھی فیملیز ہیں
جناب والا ہمارہ یہ استحصال بند کیا جاۓ ہم بھی انسان ہیں ٹرانسپورٹ جب چلی اس وقت جو ڈنڈا آپ نے ہمیں دینا ہے ہم اس کے لیے تیار ہیں اور خدا راہ اب ہمیں گھر جانے دیں ہم آپ کے ممنون ہوں گے

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں